طواف کی اہم دعا

logomaqbooliya

رسول اللہ آقائے کائنات صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’جس نے کامل وضو کیا، پھر حجرِ اسود کو بوسہ دینے قریب آیا وہ رحمت میں داخل ہوا، پھر پڑھا:


بِسْمِ اللہِ وَاللہُ اَکْبَرْ اَشْھَدُ اَنْ لَّآ اِلٰہَ اِلَّا اللہُ وَحْدَہٗ لَا شَرِیْکَ لَہٗ وَاَشْھَدُ اَنَّ مُحَمَّدًا عَبْدُہٗ وَرَسُوْلُہٗ. سُبْحَانَ اللہِ وَالْحَمْدُ لِلہِ وَلَآ اِلٰہَ اِلَّا اللہُ وَاللہُ اَکْبَرُ ط وَلَا حَوْلَ وَلَا قُوَّةَ اِلَّا بِاللہِ۔ اَللّٰھُمَّ اِنِّیْٓ اَسْئَلُکَ الْعَفْوَ وَالْعَافِیَةَ فِی الدُّنْیَا وَالْاٰخِرَةِ ط رَبَّنَآ اٰتِنَا فِی الدُّنْیَا حَسَنَةً وَّفِی الْاٰخِرَةِ حَسَنَةً وَّقِنَا عَذَابَ النَّارِ وَاَدْخِلْنَا الْجَنَّةَ مَعَ الْاَبْرَارِ یَا عَزِیْزُ یَا غَفَّارُ یَا رَبَّ الْعٰلَمِیْنَ.

تو وہ رحمت میں چل رہا ہے جیسے کوئی پانی میں پاؤں سے چل رہا ہے۔ اس کا مقام یہ ہوگا کہ اپنے گھر والوں میں سے ستر (70) افراد کی شفاعت کرے گا۔ (ابنِ ماجہ شریف)