مستحبات طواف

logomaqbooliya

دونوں ہاتھوں سے یا پھر داہنے ہاتھ سے رکن یمانی کو ہاتھ لگا کر مس کرنا، شروع طواف میں حجراسود سے ذرا ہٹ کر بائیں طرف کھڑا ہونا تاکہ بوقت طواف اس پر سے تمام بدن گزر جائے، حجراسود کو تین بار بوسہ دینا، اذکار وادعیہ کا پڑھنا اور آہستہ پڑھنا، دوران طواف زیادہ تربیت اللہ کے قریب رہنا مستحب ہے لیکن قرب میں رہنے سے کسی کو تکلیف پہنچے تو دور رہ کر طواف کرے کیوں کہ ایذاء حرام ہے اور حرام سے بچنا ضروری ہے، کعبہ شریف کے بنیادی پشتہ سے دوررہ کر طواف کرنا کہ بدن کا کپڑا بھی اس سے نہ لگے، اسی طرح حطیم کی دیوار سے بھی دور رہنا، کعبہ سے عورت کا دوررہ کر طواف کرنا، ہر اس کام سے بچنا جو خشوع اور خضوع کے منافی ہو، جیسے کہ تشبیک یعنی ایک ہاتھ کی انگلیوں کو دوسرے ہاتھ کی انگلیوں میں ڈال کر طواف کرنا یا بحالت طواف کو لہوں یا کمر یا گدی یا منہ پر ہاتھ رکھ کر چلنا، یا بلاضرورت لوگوں کے چہروں کی طرف التفات کرنا، ان سب باتوں سے بچنا مستحب ہے، ہاتھ چھوڑ کر طواف کرنا، نماز کی طرح بندھے ہوئے نہ ہوں، درود شریف و اذکار ماثورہ کا پڑھنا، اور اس سے افضل قرآن پاک پڑھنا ہے، عورت کا رات میں طواف کرنا۔