شاعری

سر سے پا تک ہر اَدا ہے لاجواب

سر سے پا تک ہر اَدا ہے لاجواب خوبرویوں میں نہیں تیرا جواب حسن ہے بے مثل صورت لا جواب میں فدا تم آپ ہو اپنا جواب پوچھے جاتے ہیں عمل میں کیا کہوں تم سکھا جاؤ مِرے مولا جواب… Read More

دردِ دِل کر مجھے عطا یارب

       دردِ دِل کر مجھے عطا یارب دے مرے دَرد کی دَوا یارب لاج رکھ لے گنہگاروں کی نام رحمن ہے ترا یارب عیب میرے نہ کھول محشر میں نام ستار ہے ترا یارب بے سبب بخش دے نہ پوچھ… Read More

منقبت خلیفۂ چہارم کَرَّمَ اللّٰہُ تَعَالٰی وَجْہَہٗ الْکَرِیْم

منقبت خلیفۂ چہارم کَرَّمَ اللّٰہُ تَعَالٰی وَجْہَہٗ الْکَرِیْم اے حبِ وطن ساتھ نہ یوں سوئے نجف جا ہم اور طرف جاتے ہیں تو اور طرف جا چل ہند سے چل ہند سے چل ہند سے غافل اُٹھ سوئے نجف سوئے… Read More

منقبت خلیفۂ سوّم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ

منقبت خلیفۂ سوّم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ اللّٰہسے کیا پیار ہے عثمانِ غنی کا محبوبِ خدا یار ہے عثمانِ غنی کا رنگین وہ رُخسار ہے عثمانِ غنی کا بلبل گلِ گلزار ہے عثمانِ غنی کا گرمی پہ یہ بازار ہے… Read More

منقبت خلیفۂ دوّم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ

منقبت خلیفۂ دوّم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ نہیں خوش بخت محتاجانِ عالم میں کوئی ہم سا ملا تقدیر سے حاجت رَوا فاروقِ اعظم سا ترا رشتہ بنا شیرازۂ جمعیت خاطر پڑا تھا دفتر دِین کتابُ اللّٰہ برہم سا مراد آئی… Read More

منقبت خلیفۂ اوّل رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ

بیاں ہو کس زباں سے مرتبہ صدیق اکبر کا ہے یارِ غار محبوبِ خدا صدیق اکبر کا الٰہی رحم فرما خادمِ صدیق اکبر ہوں تری رحمت کے صدقے واسطہ صدیق اکبر کا رُسل اور انبیاء کے بعد جو افضل ہو… Read More

مُعْطِیِ مطلب تمہارا ہر اِشارہ ہوگیا

مُعْطِیِ مطلب تمہارا ہر اِشارہ ہوگیا جب اِشارہ ہوگیا مطلب ہمارا ہوگیا ڈوبتوں کا یانبی کہتے ہی بیڑا پار تھا غم کنارے ہوگئے پیدا کنارا ہوگیا تیری طلعت سے زمیں کے ذرّے مَہ پارے بنے تیری ہیبت سے فلک کا… Read More

واہ کیا مرتبہ ہوا تیرا

واہ کیا مرتبہ ہوا تیرا تو خدا کا خدا ہوا تیرا تاج والے ہوں اس میں یا محتاج سب نے پایا دِیا ہوا تیرا ہاتھ خالی کوئی پھرا نہ پھرے ہے خزانہ بھرا ہوا تیرا آج سنتے ہیں سننے والے… Read More

دشمن ہے گلے کا ہار آقا

دشمن ہے گلے کا ہار آقا دشمن ہے گلے کا ہار آقا لٹتی ہے مری بہار آقا تم دل کے لیے قرار آقا تم راحتِ جانِ زار آقا تم عرش کے تاجدار مولی تم فرش کے باوَقار آقا دامن دامن… Read More

اگر قسمت سے میں ان کی گلی میں خاک ہو جاتا

اگر قسمت سے میں ان کی گلی میں خاک ہو جاتا غمِ کونین کا سارا بکھیڑا پاک ہو جاتا جو اے گل جامۂ ہستی تری پوشاک ہو جاتا تو خارِ نیستی سے کیوں اُلجھ کے چاک ہو جاتا جو وہ… Read More