islam

حکایت :

   ایک بار سلطان محی الدین اور نگزیب غازی رحمۃاللہ تعالیٰ علیہ نے بہت لمبی دعا مانگی ۔ ایک فقیر بو لا کہ حضرت ! اب کیا گدھا چاہتے ہو ؟ تخت پر بیٹھے ہو ، تاج والے ہو راج… Read More

تجارت:

پہلے معلوم ہو چکاہے کہ تجارت پیشہ انبیاء ہے اس کے بے شمار فضائل ہیں ۔ حدیث شریف میں ہے کہ تاجر مر زوق ہے اور ضرورت کے وقت غلہ روکنے والا ملعون ہے۔    (سنن ابن ماجہ ،کتاب التجارات… Read More

پیشہ اور قومیت:

مسلمانوں کی بے کاری کی وجہ ان کی جھوٹی قومیت او ر غلط قوم پرستی ہے ۔ ہند وستا ن کے مسلمانوں نے پیشے پر قومیت بنائی او رپیشہ ور قوموں کو ذلیل جانا ، ان بیوقوفوں کے نزدیک جو… Read More

معذور مسلمان:

  عا م طو ر پر دیکھا گیا ہے کہ مسلمانوں میں اندھے ، اپا ہج لوگ اور بیوہ عورتیں ، یتیم بچے بھیک پر گزارہ کرتے ہیں ، جگہ جگہ ریلوں اور گھرو ں میں یتیم بچے یتیم خانوں… Read More

ناجائز پیشے:

بے مروتی کے پیشے مکروہ ہیں جیسے ضرورت کے وقت غلہ روکنا (احتکار)غیالی کفن دوزی کے پیشے وکالت اور دلالی ۔ ہاں بو قت ضرورت ان دو نوں میں حرج نہیں جبکہ جھوٹ وغیرہ سے بچے،حرام چیز وں کے کارو… Read More

بہتر پیشہ:

    افضل پیشہ جہاد ، پھر تجارت ، پھر کھیتی باڑی ، پھر صنعت وحرفت ہے ، علمائے کرام نے فرمایا کہ جا ئز پیشو ں میں تر تیب ہے کہ بعض سے بعض اعلیٰ ہیں ۔    … Read More

انبیاء کرام نے کیا پیشے اختیار کئے:

   کسی پیغمبر نے نہ سوال کیا،نہ ناجائز پیشے کئے،ہرنبی نے کوئی نہ کوئی حلال پیشہ ضرورکیا۔چنا نچہ آدم علیہ السلام نے اولاً کپڑا بُننے کا کام  کیا اور بعد میں آپ کھیتی باڑی میں مشغول ہوگئے ۔ ہر قسم… Read More

کمائی کے عقلی فوائد:

(۱) حلال کمائی پیغمبروں کی سنت ہے (۲) کمائی سے مال بڑھتا ہے اورمال سے صدقہ ، خیرات ، حج ، زکوۃ ، مسجدو ں کی تعمیر ، خانقاہوں کی عمارت ہوسکتی ہے ۔ حضرت عثمان رضی اللہ تعالیٰ عنہ… Read More

کسب کے نقلی فضائل

    حضور انورصلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا سب سے بہتر غذا وہ ہے جو انسان اپنے ہاتھوں کی کمائی سے کھائے ۔ داؤدعلیٰ بنیناوعلیہ الصلاۃوالسلام بھی اپنی کمائی سے کھاتے تھے۔ ( صحیح البخاری ،کتاب البیوع… Read More

مسلمان اور بیکاری:

   مسلمانوں کو بر باد کر نے والے اسباب میں سے بڑا سبب ان کے جوانوں کی بیکاری اور بچوں کی آوار گی ہے ۔ پاکستا ن کے مسلمانوں پر اخراجات زیادہ اور آدمی کے ذریعہ محدود بلکہ قریباًنا بود… Read More