islam

نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذِیشان گیا

نعمتیں     بانٹتا جِس سَمْت وہ ذِیشان گیاساتھ ہی مُنشِیِ رحمت کا قلم دَان گیالے خبر جلد کہ غیروں     کی طرف دِھیان گیامیرے مولیٰ مِرے آقا تِرے قربان گیاآہ وہ آنکھ کہ ناکامِ تَمنّا ہی رہیہائے وہ دِل جو… Read More

بندہ ملنے کو قریبِ حضرت قادر گیا

بندہ ملنے کو قریب حضرتِ قادر گیالمعۂ  باطن  میں      گمنے  جلوئہ  ظاہر  گیاتیری مرضی پاگیا سورج پِھرا اُلٹے قدمتیری اُنگلی اُٹھ گئی مہ کا کلیجا چر گیابڑھ چلی تیری ضیا اَندھیر عالم سے گھٹا کھل گیا گیسو ترا رحمت… Read More

خراب حال کیا دِل کو پُرمَلال کیا

معروضہ بعد واپسی زیارتِ مطہرہ بار اوّل  ۱۲۹۶ھ خراب حال کیا دِل کو پُرمَلال کیاخراب حال کیا دِل کو پُرمَلال کیا تمہارے کُوچہ سے رُخصت کیا نہال کیانہ رُوئے گُل ابھی دیکھا نہ بُوئے گُل سُونگھی قضا نے لا کے قفس میں   … Read More

شورِ مہِ نَو سن کر تجھ تک میں دَواں آیا

شورِ مہِ نو سن کر تجھ تک میں     دَواں     آیاساقی میں     ترے صدقے مے دے رمضاں     آیااس گل کے سوا ہر پھول باگوش گراں     آیادیکھے ہی گی اے بلبل جب وقتِ فغاں     آیاجب بامِ… Read More

نہ آسمان کو یوں سرکَشیدہ ہونا تھا

نہ آسمان کو یوں     سرکَشیدہ ہونا تھاحضورِ خاکِ مَدینہ خمیدہ ہونا تھااگر گلوں     کو خزاں     نارسیدہ ہونا تھاکنارِ خارِ مَدینہ دَمیدہ ہونا تھاحضور اُن کے خلافِ اَدب تھی بیتابیمِری امید! تجھے آرمیدہ ہونا تھانظارہ خاکِ مَدینہ کا… Read More

لَمْ یَاتِ نَظِیْرُکَ فِیْ نَظَرٍ

لَم(1) یَاتِ نَظِیْرُکَ فِیْ نَظَرٍمثلِ تو نہ شُد پیدا جاناجگ راج کو تاج تورے سرسو ہے تجھ کو شہ دَوسَرا جانااَلْبَحْر(2)عَلَا وَالْمَوْجُ طَغٰی مَن بیکس وطوفاں     ہوشرُبامنجدھار میں     ہوں     بگڑی ہے ہوا موری نیَّا پار لگا جانایَاشَمْس(3)نَظَرْتِ… Read More

لطف ان کا عام ہو ہی جائے گا

لطف ان کا عام ہو ہی جائے گاشاد ہر ناکام ہو ہی جائے گاجان دے دو وعدئہ دیدار پرنقد اپنا دام ہو ہی جائے گاشاد ہے فردوس یعنی ایک دنقسمتِ خدام ہو ہی جائے گایاد رہ جائیں     گی یہ… Read More

محمد مظہرِ کامل ہے حق کی شانِ عزّت کا

محمد مظہرِ کامل ہے حق کی شانِ عزّت کانظر آتا ہے اِس کثرت میں     کچھ انداز وحدت کایہی ہے اصل عالم مادّہ ایجادِ خلقت کایہاں     وحدت میں     برپا ہے عجب ہنگامہ کثرت کاگدا بھی منتظر ہے خلد… Read More

غم ہو گئے بے شُمار آقا

غم ہو گئے بے شمار آقابندہ تیرے نثار آقا ِبگڑا جاتا ہے کھیل میرا آقا آقا سنوار آقا منجدھار پہ آ کے ناؤ ٹوٹی دے ہاتھ کہ ہُوں     میں     پار آقا ٹوٹی جاتی ہے پیٹھ میری لِلّٰہ    یہ    بوجھ     اُتار   … Read More

ہم خاک ہیں اور خاک ہی ماوا ہے ہمارا

ہم(1)خاک ہیں     اور خاک ہی مَاوا ہے ہمارا خاکی تو وہ آدم جَد اَعلیٰ ہے ہمارا اللّٰہ ہمیں     خاک کرے اپنی طلب میں     یہ خاک تو سرکار سے تمغا ہے ہمارا جس خاک پہ رکھتے تھے قدم سیِّد عالم اُس خاک… Read More