اِسلامی زندگی تالیف : حكیم الامت

میراث:

    اسلامی قانون میں مسلمانوں کی ساری اولا دیعنی لڑکے لڑکیاں اپنے ماں باپ کے مرنے کے بعد اس کے مال سے میراث لیتے ہیں ۔ لڑکے کو لڑکی سے دوگنا حصہ ملتاہے مگر ہندوؤں آریوں کے دھرم میں… Read More

موت کے بعد کی اسلامی رسمیں:

    کفن دفن کا ساراخرچہ یا تو خود میت کے مال سے ہواوراگر کسی کی بیوی یا بچہ مرا ہے تو شوہر یا باپ کے مال سے ہومیکہ سے ہرگز ہرگز نہ لیا جائے ۔ میت کے مال سے کریں… Read More

ان رسموں کی خرابیاں:

 شریعت میں کفن اس کے ذمہ ہے جس کے ذمہ اس کی زندگی کا خرچہ ہے ۔ لہٰذا ہر جوان ، مالدار مرد کا کفن اس کے اپنے مال سے دیا جانا چاہیے ۔ اورچھوٹے بچوں کا کفن اس کے… Read More

موت کے بعد کی مروجہ رسمیں :

موت کے بعد ہر علاقہ میں علیٰحدہ علیٰحدہ رسمیں ہوتی ہیں ۔مگر کچھ رسمیں ایسی ہیں ۔جو تھوڑے فرق سے ہر جگہ ادا کی جاتی ہیں ۔ان ہی کا ہم یہاں ذکر کرتے ہیں۔ دلہن کا کفن اس کے میکے… Read More

موت کے وقت کی اسلامی رسمیں :

    جان کنی کی نشانی یہ ہے کہ بیمار کی ناک ٹیڑھی پڑ جاتی ہے اورکنپٹی نیچے بیٹھ جاتی ہے جب یہ علامت بیمار میں دیکھ لی جائے تو فوراً اس کا منہ کعبہ شریف کو کردیا جائے یا… Read More

ان رسموں کی خرابیاں:

  انسان کے لئے نزع کا وقت بہت سخت وقت ہے کہ عمر بھر کی کمائی کا نچوڑ اس وقت ہورہا ہے ۔اس وقت قرابت داروں کا وہاں دنیاوی باتیں کرنا سخت غلطی ہے کیونکہ اس سے میت کا دھیان… Read More

موت کے وقت کی رسمیں:

عام طور پر یہ رواج ہے کہ میت کے مرتے وقت جو لوگ موجود ہوتے ہیں ۔ وہاں دنیاوی باتیں کرتے یں جب انتقال ہوجاتاہے تو رونے  پیٹنے کی حالت میں بے صبری اوربعض وقت کفر کے کلمے منہ سے… Read More

نا پسند یدہ رسوم

 ہر شخص کو ایک دن مرنا اور دنیا سے جانا ہے اورکیا خبر ہے کہ کس کی موت کس جگہ اور کس وقت آجائے ۔ اس لئے ہر مسلمان کو لازم ہے،میت کے غسل اورکفن دفن کے مسائل سیکھے کہ… Read More

لڑکیوں کی تعلیم :

    اپنی لڑکی کو وہ علم و ہنر ضرور سکھادو جس کی اس کو جوان ہوکر ضرور ت پڑے گی لہٰذا سب سے پہلے لڑکی کو پاکی پلیدی، حيض و نفاس کے شرعی مسئلے روزہ ،نماز،زکوٰۃوغيرہ کے مسئلے پڑھا… Read More

اسلامی پردہ اور طریقہ زندگی:

    عورت کا جسم سر سے پاؤں تک ستر ہے جس کا چھپانا ضروری ہے سِوا چہرے اور کلائیوں تک ہاتھوں اور ٹخنے سے نیچے تک پاؤں کے ، کہ ان کا چھپانا نماز میں فرض نہیں باقی حصّہ… Read More