Islam

مشق

سوال نمبر1: مندرجہ ذیل جملے جملہ انشائیہ کی کو نسی قسم سے تعلق رکھتے ہیں؟ ۱۔ھَلْ أَنْتَ زَیْدٌ؟ ۲۔أُسْکُنْ أَنْتَ وَزَوْجُکَ الْجَنَّۃَ۔ ۳۔لَیْتَ الشَّبَابَ یَعُوْدُ۔ ۴۔بِعْتُہ،۔ ۵۔اِشْتَرَیْتُ عَبْداً۔ ۶۔لَعَلَّ الْمَطْرَ یَنْزِلُ۔ ۷۔أَزَیْدٌ قَائِمٌ؟ ۸۔اِضْرِبْ۔ ۹۔لاَ تَشْرَبِ الْخَمْرَ۔ ۱۰۔أَلاَ تَقُوْلُ الصِّدْقَ… Read More

۔۔۔۔۔جملہ انشائیہ کا بیان۔۔۔۔۔

جملہ انشائیہ کی تعریف:     وہ جملہ جس کے کہنے والے کو سچا یا جھوٹا نہ کہا جا سکے۔ جیسے: زَیِّنْ اَخْلَاقَکَ (اپنے اخلاق سنوارو) لَاتَغْضَبْ عَلی اَحَدٍ  (کسی پر غصہ مت کرو)۔  جملہ انشائیہ کی اقسام    … Read More

مشق

سوال نمبر1: منصرف وغیر منصرف الگ الگ کریں۔     ۱۔زَیْدٌ۔ ۲۔زُفَرُ۔ ۳۔مَسَاجِدُ۔ ۴۔رِجَالٌ۔ ۵۔ثَلاثَۃٌ۔ ۶۔مَثْلَثُ۔ ۷۔رُبَاعُ۔ ۸۔أَرْبَعٌ۔ ۹۔سَوْدَآءُ۔ ۱۰۔أَسْوَدُ۔ ۱۱۔ضَارِبٌ۔ ۱۲۔ھِنْدٌ۔ ۱۳۔زَیْنَبُ۔ ۱۴۔نُوْحٌ (علیہ السلام)۔ ۱۵۔مَاءٌ۔ ۱۶۔مَاہُ۔ ۱۷۔اِسْمَاعِیْلُ۔ ۱۸۔عَائِشَۃُ۔ ۱۹۔طَلْحَۃُ۔ ۲۰۔فَرَازِنَۃٌ۔ ۲۱۔أَحْمَدُ۔ ۲۲۔عِمْرَانُ۔ ۲۳۔عُثْمَانُ۔ ۲۴۔أُحَادُ۔ ۲۵۔مِیْکَائِیْلُ۔ ۲۶۔سَکْرَانُ۔ سوال نمبر2:… Read More

اسباب منع صرف کی تعریفات اور شرائط

(۱)عدل کی تعریف: کسی اسم کابغیر کسی قاعدہ صرفی کے اپنے صیغے سے دوسرے صیغے کی طرف پھیراہوا ہونا۔جیسے:ثُلٰثُ(تین تین)ثَلٰثَۃٌ ثَلٰثَۃ سے اور عُمَرُ(نام)عَامِرٌسے بغیر کسی قاعدہ صرفی کے پھیراگیا ہے . فائدہ: جو اسم دوسرے صیغے سے پھیرا گیا… Read More

۔۔۔۔۔غیر منصرف کا بیان۔۔۔۔۔

غیرمنصرف کی تعریف:     وہ اسم معرب جس میں منع صرف کے اسباب میں سے کوئی دوسبب یا ایک ایسا سبب پایا جائے جو دو کے قائم مقام ہو ۔جیسے:عُمَرُ، عَائِشَۃُ، وغیرہ۔  غیر منصرف کا حکم:     غیر… Read More

مشق

سوال نمبر1: تذکیر و تانیث کا خیال رکھتے ہوئے مندرجہ ذیل اسماء کے ساتھ مناسب افعال لگائیں۔ ۱۔اَلرَّجُلُ۔ ۲۔ہِنْدٌ۔ ۳۔فَاطِمَۃُ۔ ۴۔اَلأُسْتَاذُ۔ ۵۔اَلرِّجَالُ۔ ۶۔اَلْبِنْتُ۔ ۷۔طِفْلاَنِ۔ ۸۔مُسْلِمَاتٌ۔ ۹۔مُسْلِمُوْنَ۔ ۱۰۔طَائِرٌ۔ ۱۱۔اَلرِّجَالُ۔ ۱۲۔عُلَمَاءُ۔ سوال نمبر2: مندرجہ ذیل جملوں کی ترکیب اورترجمہ کریں۔    … Read More

فعل، فاعل اور مفعول کا حذف

 ۱۔جب حذف فعل پرکوئی قرینہ(ایساامر جو فعل محذوف پر دلالت کرے)پایا جائے تو فعل کو حذف کرنا جائز ہے۔ جیسے کوئی سوال کرے:مَنْ جَاءَ ؟ اور اس کے جواب میں صرف:زَیْدٌکہاجائے تو اس سے پہلےجَاءَ فعل محذوف ہو گااور زَیْدٌ… Read More

درج ذیل صورتوں میں فاعل کو مفعول پر مقدم کرنا ضروری ہے

   ۱۔ جب فاعل ضمیر مرفوع متصل ہو ۔جیسے :أَکَلْتُ خُبْزاً۔     ۲۔ جب فاعل اور مفعول میں اعراب اور قرینہ(۱)دونوں منتفی ہوں جوان میں سے کسی ایک کے فاعل اور ایک کے مفعول ہونے پر دلالت کرے۔جیسے: سَلَّمَ… Read More

فاعل کی اقسام

    فاعل کبھی اسم ظاہر ہوتاہے ۔جیسے:لَمَعَ الْبَرْقُ میں الْبَرْقُ اسے ''مظہر''بھی کہتے ہیں.  کبھی اسم ضمیر ہوتاہے خواہ بارز ہو یامستتر۔جیسے:ضَرَبْتُ میں تُ ضمیربارز فاعل ہے اورزَیْدٌ ضَرَبَ میں ھُوَ ضمیر مستتر فاعل ہے،اسے ''مضمر''بھی کہتے ہیں۔اور کبھی… Read More

۔۔۔۔جملہ فعلیہ کابیان۔۔۔۔۔

جملہ فعلیہ کی تعریف:     وہ جملہ جو فعل اور فاعل سے مرکب ہو۔ جیسے: جَاءَ زَیْدٌ۔ فائدہ:     (۱)فعل کو''مسند''اور فاعل کو''مسند الیہ''کہتے ہیں ۔     (۲)ہر فعل چاہے لازم ہو یا متعدی اپنے فاعل کو… Read More