Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

Month: 2019 اگست

ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

سر صبح سعادت نے گریباں سے نکالا

سر صبح سعادت نے گریباں سے نکالا ظلمت کو ملا عالم اِمکاں سے نکالا پیدائشِ محبوب کی شادی میں خدا…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

یہ اِکرام ہے مصطفیٰ پر خدا کا

یہ اِکرام ہے مصطفیٰ پر خدا کا کہ سب کچھ خدا کا ہوا مصطفیٰ کا یہ بیٹھا ہے سکہ تمہاری…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

تمہارا نام مصیبت میں جب لیا ہوگا

تمہارا نام مصیبت میں جب لیا ہوگا ہمارا بگڑا ہوا کام بن گیا ہوگا گناہگار پہ جب لطف آپ کا…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

ایسا تجھے خالق نے طرح دار بنایا

ایسا تجھے خالق نے طرح دار بنایا یوسف کو ترا طالب دیدار بنایا طلعت سے زمانہ کو پراَنوار بنایا نکہت…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

قبلہ کا بھی کعبہ رُخِ نیکو نظر آیا

قبلہ کا بھی کعبہ رُخِ نیکو نظر آیا کعبہ کا بھی قبلہ خمِ اَبرو نظر آیا محشر میں کسی نے…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

مجرمِ ہیبت زَدہ جب فردِ عصیاں لے چلا

مجرمِ ہیبت زَدہ جب فردِ عصیاں لے چلا لطف شہ تسکین دیتا پیش یزداں لے چلا دل کے آئینہ میں…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سروَر کا

تصور لطف دیتا ہے دہانِ پاک سروَر کا بھرا آتا ہے پانی میرے مونہہ میں حوضِ کوثر کا جو کچھ…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

کہوں کیاحال زاہد گلشنِ طیبہ کی نزہت کا

کہوں کیاحال زاہد گلشنِ طیبہ کی نزہت کا کہ ہے خلد بریں چھوٹا سا ٹکڑا میری جنت کا تَعَالَی اللّٰہ…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

دل مرا دنیا پہ شیدا ہوگیا

دل مرا دنیا پہ شیدا ہوگیا اے مرے اللّٰہ یہ کیا ہو گیا کچھ مرے بچنے کی صورت کیجئے اب…

Read More »
ذَوقِ نَعت ۱۳۲۶ھ برادرِ اعلیٰ حضرت شہنشاہِ سخن مولانا حسن رضا خان

عاصیوں کو در تمہارا مل گیا

عاصیوں کو در تمہارا مل گیا بے ٹھکانوں کو ٹھکانہ مل گیا فضلِ رب سے پھر کمی کس بات کی…

Read More »
Back to top button
error: Content is protected !!