بارگاہ ِرسالت صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وسلَّم میں ہدیۂ درود وسلام

بارگاہ ِرسالت صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وسلَّم میں ہدیۂ درود وسلام

اَللہُ زَادَ مُحَمَّدًا تَکْرِیْمًا
حَبَاہ، فَضْلًا مِن لَّدُنْہ، عَظِیْمًا
وَاخْتَارَہ، فِی الْمُرْسَلِیْنَ کَرِیْمًا
ذَا رَأْفَۃٍ بِالْمُؤْمِنِینَ رَحِیْمًا
صَلُّوْا عَلَیْہِ وَسَلِّمُوْا تَسْلِیْمًا
یَا اُمَّۃَ الْہَادِیْ خُصِّصْتُمْ بِالْوَفَا
بَیْنَ الْوَرٰی وَالصِّدْقِ اَیْضًاوَالصَّفَا
صَلُّوْا عَلَی النَّبِیِّ الْہَادِیِّ الْمُصْطَفٰی
فَاللہُ قَدْ صَلَّی عَلَیْہِ قَدِیْمًا
صَلُّوْا عَلَیْہِ وَسَلِّمُوْا تَسْلِیْمًا

فَمَتٰی اَرٰی الْحَادِیِّ یُبَشِّرُ بِاللِّقَا
وَیَضُمُّنَا بَابَ الْمُحَصَّبِ وَالنَّقَا
وَاَرٰی ضَرِیْحَ الْمصطفٰی قَدْ اَشْرَقَا
مَوْلٰی رَحِیْمًا لَا یَزَالُ حَلِیمًا
صَلُّوْا عَلَیْہِ وَسَلِّمُوْا تَسْلِیْمًا
ثُمَّ الرِّضَا عَنْ آلِہِ الْکُرَمَاءِ
وَکَذَاکَ عَنْ اَصْحَابِہِ الْخُلَفَاءِ
فَہُمُوْ ھُمُوْ دِیْنِیْ وَعَقْدُ وِلَائِی
قَوْمًا تَرَاھُمْ فِی الْمَعَادِ نَجُوْمًا
صَلُّوْا عَلَیْہِ وَسَلِّمُوْا تَسْلِیْمًا

ترجمہ:(۱)۔۔۔۔۔۔اللہ عزَّوَجَلَّ نے حضرتِ سیِّدُنا محمدِ مصطفی صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کی عزَّت بڑھائی اور اپنی طرف سے فضلِ عظیم فرمایا اور آپ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کو تمام رسولوں میں کرم والا بنایا۔ یہ مؤمنین کے ساتھ مہربان اور رحیم ہیں، پس اُن پردروداور خوب سلام بھیجو۔
(۲)۔۔۔۔۔۔اے ہادی صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کی اُمَّت! تمہیں تمام مخلوق میں سے وفا اور صدق وصفا کے ساتھ خاص کیا گیا ہے پس تم ہدایت دینے وا لے نبی صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم پر درودِپاک پڑھو، کیونکہ اللہ عزَّوَجَلَّ بھی آپ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم پر ہمیشہ دُرود بھیجتا ہے لہٰذا تم بھی اُن پردروداور خوب سلام بھیجو۔
(۳)۔۔۔۔۔۔میں کب حبیب ِخدا عزوجل و صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کے دیدار کی خوشخبری دینے والے سوار کو پاؤں گا جو ہمیں باب ِ مُحَصَّب اور ریت کے ٹیلوں کی جانب لے جائے گا اور میں مزارِ مصطفی صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کا دیدار کر لوں گا جس کو رحیم وحلیم مولیٰ نے منور فرما دیا ہے۔ پس ان پر درود اور خوب سلام بھیجو۔
(۴)۔۔۔۔۔۔پھر اللہ عزَّوَجَلَّ آپ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کی کریم آل اور آپ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کے خلفائے راشدین صحابہ کرام علیہم الرضوان سے راضی ہو، وہ میرا دین اور میری محبت کی گرہ ہیں، وہ ایسے لوگ ہیں کہ تم اُنہیں بروزِ قیامت ستاروں کی طرح دیکھوگے۔ پس ان پر درود اور خوب سلام بھیجو۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *