Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

اہل ِ خانہ کی تنقید

اہل ِ خانہ کی تنقید

بعض بھائی توبہ کرکے اپنا طرزِ زندگی بدلنا چاہتے ہیں لیکن جونہی وہ کوئی عملی قدم اٹھاتے ہیں ان کے گھر والے آڑے آجاتے ہیں اور انہیں اس طرح ”سمجھاتے ” نظر آتے ہیں کہ دیکھ ابھی تو تم جوان ہو ، بڑھاپے میں داڑھی رکھ لینا ”، ”ابھی تو تمہاری شادی بھی کرنی ہے اگر تم کسی دینی ماحول سے وابستہ ہوگئے تو کوئی تمہیں اپنی لڑکی نہیں دے گا ”وغیرہ وغیرہ
اس کا حل:
اس سلسلے میں ذرا سی ہمّت کی ضرورت ہے ، اگر ارادہ پختہ ہو اور نگاہ رحمتِ الہٰی پر ہو تو مشکل مراحل بھی بآسانی طے ہوجایا کرتے ہیں ۔ لہذا! گھر والوں کی تنقید
سے ہرگز مت گھبرائیں اور نہ ہی ان کے ڈرانے پر خوف زدہ ہوں بلکہ ان سے الجھے بغیر گناہوں کو ترک کرنے اور نیکیوں کا ذخیرہ جمع کرنے کا سلسلہ جاری رکھیں ۔ اس ضمن میں شیخ ِ طریقت امیرِ اہل سنّت بانی دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطار قادری مدظلہ العالی کے عطا کردہ ”گھر میں مدنی ماحول بنانے کے مدنی پھولوں ”پر عمل کرنا بے حد مفید ثابت ہوگا ۔

error: Content is protected !!