Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

سنت اعتکاف کے لیے کونسی شرائط ہیں، کیا نامرد اور خنثٰی مسجد میں اعتکاف کر سکتے ہیں ،کیا معتکف کے لیے اعتکاف کے دوران خاموش رہنا ضروری ہے؟

سوال: سنتِ اعتکاف کے لیے کتنی اور کون کونسی شرائط ہیں؟💐
جواب: سنتِ اعتکاف کے لیے درج ذیل چھ شرائط ہیں:
① مسلمان ہونا ، ② عاقل ہونا ، ③ جنابت (یعنی بے غسلی) سے پاک ہونا ، ④ عورت کا حیض و نفاس سے پاک ہونا ، ⑤ نیت کرنا ، ⑥ روزہ رکھنا۔ (فتاویٰ عالمگیری)📚✒️

سوال: کیا نا بالغ مسجد میں اعتکاف کر سکتا ہے؟
جواب: اگر کوئی نابالغ سمجھدار ہے تو وہ مسجد میں اعتکاف کر سکتا ہے۔(فتاویٰ عالمگیری)*
❥➻•─────────••➻❥
سوال: کیا نامرد اور خنثٰی (یعنی ہیجڑا) مسجد میں اعتکاف کر سکتے ہیں؟
جواب: نامرد اور خنثٰی (یعنی ہیجڑا) دونوں مسجد میں اعتکاف کر سکتے ہیں۔(فتاویٰ بریلی)🌸❣️📚

سوال: کیا معتکف کے لیے اعتکاف کے دوران خاموش رہنا ضروری ہے؟
جواب: معتکف کے لیے اعتکاف کے دوران خاموش رہنا ضروری نہیں ہے بلکہ خاموشی کو ثواب سمجھ کر خاموش رہنا مکروہِ تحریمی ، ناجائز و گناہ ہے۔ اور اگر خاموش رہنا ثواب کی بات سمجھ کر نہ ہو تو کوئی حرج و گناہ نہیں ، اور بری باتوں سے خاموش رہنا تو بہت اعلٰی چیز ہے۔ (بہار شریعت)✷❣️

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!