Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

بھنگ کے نقصانات:

بعض علماء کرام رحمہم اللہ تعالیٰ نے ارشاد فرماياہے کہ اس کو کھانے ميں ایک سوبیس (120)دينی و دنيوی نقصانات ہيں، جن ميں سے چند يہ ہيں :
(۱)۔۔۔۔۔۔گھٹیاسوچ کامالک بنانا(۲)۔۔۔۔۔۔فطرتی رطوبات کو خشک کرنا(۳)۔۔۔۔۔۔بدن ميں امراض پيداکرنا (۴)۔۔۔۔۔۔بھولنے کی بيماری لگنا (۵)۔۔۔۔۔۔سر کا چکرانا (۶)۔۔۔۔۔۔نسل ختم کرنا (۷)۔۔۔۔۔۔منی کا خشک ہونا (۸)۔۔۔۔۔۔اچانک موت لانا (۹)۔۔۔۔۔۔عقل کو فاسد اور زائل کرنا (۱۰)۔۔۔۔۔۔تپ دق (۱۱)۔۔۔۔۔۔استسقاء اور (۱۲)۔۔۔۔۔۔سل کی بيماری پيد اکرنا (۱۳)۔۔۔۔۔۔فکر فاسد کرنا (۱۴)۔۔۔۔۔۔ذکرِ خدا بھلانا (۱۵)۔۔۔۔۔۔راز فاش کروانا (۱۶)۔۔۔۔۔۔برائی شروع کرنا (۱۷)۔۔۔۔۔۔حياء ختم کرنا (۱۸)۔۔۔۔۔۔بہت زیادہ دکھلاوا کرنا (۱۹)۔۔۔۔۔۔مُرُوَّت کا نہ ہونا (۲۰)۔۔۔۔۔۔محبت کا نہ ہونا (۲۱)۔۔۔۔۔۔ستر کا کھل جانا (۲۲)۔۔۔۔۔۔غيرت کانہ ہونا (۲۳)۔۔۔۔۔۔عقل مندی کا ضائع ہونا (۲۴)۔۔۔۔۔۔ابليس کا ہم نشين ہونا (۲۵)۔۔۔۔۔۔نمازوں کا چھوڑنا (۲۶)۔۔۔۔۔۔حرام کاموں کا ارتکاب کرنا (۲۷)۔۔۔۔۔۔برص اور (۲۸)۔۔۔۔۔۔کوڑھ پن کا شکار ہو جانا (۲۹)۔۔۔۔۔۔لگاتار بيمار رہنا (۳۰)۔۔۔۔۔۔دائمی زکام لگنا (۳۱)۔۔۔۔۔۔جگر کا چھلنی ہو جانا (۳۲)۔۔۔۔۔۔خون اور منہ کی بو کا جلنا (۳۳)۔۔۔۔۔۔منہ کابدبو دار ہونا (۳۴)۔۔۔۔۔۔دانتوں کا خراب ہوجانا (۳۵)۔۔۔۔۔۔پلکوں کے بال گر جانا (۳۶)۔۔۔۔۔۔دانتوں کا پيلا ہو جانا


(adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});

 (۳۷)۔۔۔۔۔۔نظر کا کمزورہو جانا (۳۸)۔۔۔۔۔۔سست ہونا (۳۹)۔۔۔۔۔۔نيند کا زيادہ آنا (۴۰)۔۔۔۔۔۔اور سستی آنا (۴۱)۔۔۔۔۔۔يہ شير کوبچھڑا بنا ديتی ہے (۴۲)۔۔۔۔۔۔عزت والا ذليل ہو جاتاہے (۴۳)۔۔۔۔۔۔صحيح بيمار ہو جاتا ہے (۴۴)۔۔۔۔۔۔بہادر بزدل ہو جاتا ہے (۴۵)۔۔۔۔۔۔کريم حقير و کمزور ہو جاتاہے (۴۶)۔۔۔۔۔۔اگر اسے کھلايا جائے تو سير نہيں ہوتا (۴۷)۔۔۔۔۔۔عطا کیا جائے تو شکر گزار نہيں ہوتا (۴۸)۔۔۔۔۔۔اگر بات کی جائے توسنتا نہيں (۴۹)۔۔۔۔۔۔يہ ماہرِ زبان کو گونگا اور (۵۰)۔۔۔۔۔۔ذہين کو کند ذہن بنا ديتی ہے (۵۱)۔۔۔۔۔۔ذہانت کو ختم کر ديتی ہے (۵۲)۔۔۔۔۔۔پيٹ کا مرض پيدا کرتی ہے (۵۳)۔۔۔۔۔۔نامردی اور (۵۴)۔۔۔۔۔۔لعنت کا وارث بناتی ہے (۵۵)۔۔۔۔۔۔جنت سے دوری پيدا کرتی ہے (۵۶)۔۔۔۔۔۔مرتے وقت کلمہ شہادت بھلا ديتی ہے۔ بلکہ کہا گيا ہے کہ يہ اس کی ادنیٰ قباحتوں ميں سے ہے۔
error: Content is protected !!