Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

شجرہ ٔ عُلِیَّہ حضرات عالیہ قادریہ برکاتیہ

شجرہ ٔ       عُلِیَّہ حضرات عالیہ قادریہ برکاتیہ
 رِضْوَانُ اللّٰہِ تَعَالٰی عَلَیْہِمْ اَجْمَعِیْن اِلٰی یَوْمِ الدِّیْن

یاالٰہی رحم فرما مصطفیٰ کے واسطے

یاالٰہی رحم فرما مصطفیٰ کے واسطے
یارسول  اللّٰہ  کرم  کیجے   خدا  کے  واسطے 
مشکلیں     حل کر شہ مشکل کشا کے واسطے
کر بَلائیں     رد شہیدِ کربلا کے واسطے
سیّدِ سجاد کے صدقے میں     ساجِد رکھ مجھے
علم حق دے باقرِ علمِ ہُدی کے واسطے
صدقِ صادق کا تصدّق صادِق الاسلام کر
بے غضب راضی ہوکاظم اور رضا کے واسطے
بہر معروف و سری معروف دے بے خود سَری
جندِ حق میں     گِن جنید با صفا کے واسطے
بہرِ شبلی شیرِ حق دُنیا کے کتّوں     سے بچا
ایک  کا  رکھ  عبدِ  واحد  بے  رِیا  کے  واسطے
بوالفرح کا صَدقہ کر غم کو فرح دے حسن و سعد
بوالحسن اور بوسعیدِ سعد زا کے واسطے
قادِری کر قادِری رکھ قادِریوں     میں     اُٹھا
قدرِ عبدالقادرِ قدرت نما کے واسطے
اَحْسَنَ  اﷲُ  لَہُمْ  رِزْقًا سے دے رزقِ حسن
بندئہ رزّاق تاجُ الاصفیا کے واسطے
نصْر ابی صَالح کا صَدقہ صَالح و منصور رکھ
د ے حیاتِ دیں     مُحیِّ جاں     فزا کے واسطے
طُورِ(1) عِرفَان و عُلو و حمد و حسنٰے و بہا
دے علی موسیٰ حسن احمد بہا کے واسطے
بہرِ ابراہیم مجھ پر نارِ غم گلزار کر
بھیک دے داتا بھکاری بادشا کے واسطے
خانۂ دل کو ضیا دے رُوئے اِیماں     کو جَمال
شہ ضیا مولیٰ جمال الاولیا کے واسطے
دے محمد کے لئے روزی کر احمد کے لئے
خوانِ فضل اﷲ سے حصّہ گدا کے واسطے
دِین و دُنیا کے مجھے برکات دے برکات سے
عِشق حق دے عشقی(1)عِشق اِنتما کے واسطے
حُبِّ اہلِ بیت دے آلِ محمّد کے لئے
کر شہیدِ عِشق حمزہ پیشوا کے واسطے
دل کو اچھا تن کو ستھرا جان کو پُر نور کر
اچھّے پیارے شمسِ دِیں     بدرُ العلیٰ کے واسطے
دو جہاں     میں     خادمِ آلِ رسول اﷲ کر 
حضرتِ آلِ رسولِ(1)مقتدا کے واسطے
صَدقہ ان اَعیاں     کا دے چھ عین عز علم و عمل
عفو و عرفاں     عافیت احمد رضا کے واسطے
٭…٭…٭…٭…٭…٭
جسے جو ملا۔۔۔۔۔۔۔۔
فرمانِ مصطفی صلَّی اللّٰہ تَعالٰی عَلَــیْہِ وَسَلَّم: ’’ اِنَّمَا اَنَا قَاسِمٌ وَ اللّٰہُ یُعْطِی‘‘ یعنی اللّٰہ عطا کرتا ہے اور میں     تقسیم کرتا ہوں     (صحیح بخاری،ج۱،الحدیث:۷۱، ص۴۳) اس حدیث پاک کے تحت مفتی احمد یار خان    عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الْحَنَّان فرماتے ہیں    : دین و دنیا کی ساری نعمتیں     علم، ایمان، مال، اولاد وغیرہ دیتا  اللّٰہ ہے بانٹے حضورصلَّی اللّٰہ تَعالٰی عَلَــیْہِ وَسَلَّم ہیں     جسے جو ملا حضور صلَّی اللّٰہ تَعالٰی عَلَــیْہِ وَسَلَّمکے ہاتھوں     ملا کیونکہ یہاں     نہ اللہ کی دَین میں     کوئی قید ہے نہ حضور کی تقسیم میں    ۔(مراٰۃ المناجیح،ج۱،ص۱۸۷)
________________________________
1 – ۔۔۔ :یعنی مرتبہ معرفت اور بلندی کا اور خوبی ا ور بہتری اور نور عطا کر ان مشائخِ خمسہ کے واسطے اس میں     علوؔ بمنا سبت نام پاک حضرت سیّدنا علیؔ ہے اور طوؔر عرفاں     بمناسبت نام پاک حضرت سیّد موسیٰؔ اور حسنیٰؔ بمناسبت نام پاک حضرت سیّدی حسنؔ اورا حمدؔ بمناسبت نام سیدی احمدؔ اور بہاؔ بمناسبت نام پاک حضرت سیّدی بہاء الملۃ والدّین قُدِّسَتْ اَسْرَارُ ہُمْ۔  
1 – ۔۔۔ : عشقی ‘‘حضرت سیّدنا شاہ برکت اللّٰہ رَحْمَۃُ اللّٰہ تَعَالٰیعَلَیْہِ  کا تخلص ہے ،اور’’ انتما‘‘ بمعنی انتساب یعنی نسبتِ عشق رکھنے والے۱۲
________________________________
1 – ۔۔۔ : عرس شریف ۱۶، ۱۷، ۱۸ ذی الحجۃ الحرام، بریلی شریف محلہ سود اگر ان میں    ہوا کرتا ہے۔ 
error: Content is protected !!