Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

پودے لگانے کے فَضائل

پودے لگانے کے فَضائل

سُوال : کیا پودے لگانے کے فَضائل بھی ہیں ؟
جواب : جی ہاں !اَحادیثِ مُبارَکہ میں پودے لگانے کے فَضائل بھی بیان ہوئے ہیں ۔ پودے لگانے کے فَضائل پر تین فَرامینِ مصطفے ٰ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم مُلاحظہ کیجیے : (۱ ) جو مسلمان دَرخت لگائے ىا فَصل بوئے پھر اس مىں سے جو پرندہ ىا اِنسان یا چوپایا کھائے تو وہ اس کى طرف سے صَدَقہ شُمار ہو گا ۔ (1)
(۲ ) جس نے کوئى دَرخت لگاىا اور اُس کى حفاظت اور دىکھ بھال پر صَبر کىا ىہاں تک کہ وہ پھل دىنے لگا تو اُس مىں سے کھاىا جانے والا ہر پھل اللہ پاک کے نزدىک اس(لگانے والے ) کے لىے صَدَقہ ہے ۔ (2)
(۳ )جس نے کسى ظلم و زىادتى کے بغىر کوئى گھر بناىا ىا ظلم و زىادتى کے بغىر کوئى دَرخت اُگایا ، جب تک اللہ پاک کى مخلوق مىں سے کوئى اىک بھى اس مىں سے نفع اُٹھاتا رہے گا تو اس(لگانے والے )کو ثواب ملتا رہے گا ۔ (3)

________________________________
1 – بخاری، کتاب الحرث والمزارعة، باب فضل الزرع والغرس اذا اکل منه، ۲ / ۸۵، حدیث : ۲۳۲۰ دار الکتب العلمية بیروت
2 – مسندامام احمد، حدیث عمرو بن القاری عن ابیه عن جدہ، ۵ / ۵۷۴، حدیث : ۱۶۵۸۶
3 – مسندامام احمد، حدیث معاذ بن انس الجھنی، ۵ / ۳۰۹، حدیث : ۱۵۶۱۶

error: Content is protected !!