Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

آبِ زمزم کے فضائل

(43)۔۔۔۔۔۔خاتَمُ الْمُرْسَلین، رَحْمَۃٌ لّلْعٰلمین صلَّی  اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے:”جس وقت جبرائیلِ امین (علیہ السلام) نے اپنی ایڑی مار کر زمین سے چاہِ زمزم جاری کیا تو حضرت اسماعیل (علیہ السلام) کی والدہ ماجدہ اسے وادی میں جمع کرنے لگیں، اللہ عزوجل ان پر رحم فرمائے اگر وہ اسے اسی طرح چھوڑدیتیں تو ساری وادی بھر جاتی۔”
(السنن الکبری للنسائی،کتاب المناقب،باب ہاجرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا،الحدیث:۸۳۷۶،ج۵،ص۹۹)
(44)۔۔۔۔۔۔سیِّدُ المُبلِّغین،رَحْمَۃٌ لِّلْعٰلَمِیْن صلَّی  اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کافرمانِ عالیشان ہے:”آبِ زمزم جبرائیل(علیہ السلام) کا ”ہَزْمَۃ” (يعنی ہاتھ یاپاؤں سے زمین میں بننے والاگڑھا)ہے،اور پھران دونوں(يعنی حضرت ہاجرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا اورجبرائيل علیہ السلام)نے حضرت اسماعیل علیہ السلام کو پانی پلایا۔”
   (سنن الدار قطنی،کتاب الحج،باب المواقیت،الحدیث:۲۷۱۳،ج۲،ص۳۶۵)
 (45)۔۔۔۔۔۔شفیعُ المذنبین، انیسُ الغریبین، سراجُ السالکین صلَّی  اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم نے ارشادفرمایا:”آبِ زمزم دنیاوآخرت کے جس مقصدکے لئے بھی پیاجائے کافی ہے۔”


(adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});

 (سنن ابن ماجۃ،ابواب المناسک،باب الشرف من زمزم،الحدیث:۳۰۶۲،ص۲۶۶۲،بدون ”من امرالدنیاوالآخرۃ”)
 (46)۔۔۔۔۔۔مَحبوبِ ربُّ العلمین، جنابِ صادق وامین عزوجل وصلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے:”آبِ زمزم پیٹ بھرکرپینانفاق سے چھٹکارا دیتا ہے۔”
       (فردوس الأخبار،باب التاء،الحدیث:۲۲۵۵،ج۱،ص۳۰۹)
 (47)۔۔۔۔۔۔سرکارِمدینہ،راحتِ قلب وسینہ،باعثِ نزولِ سکینہ صلَّی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے:”آبِ زمزم سطح زمین پر موجود ہر پانی سے بہتر ہے۔”
        (المعجم الکبیر،الحدیث:۱۱۱۶۷،ج۱۱،ص۸۰)
error: Content is protected !!