Our website is made possible by displaying online advertisements to our visitors. Please consider supporting us by whitelisting our website.

فعل کی اقسام کابیان

    مختلف اعتبار سےفعل کی مختلف اقسام ہیں۔چنانچہ: 
٭ (۱)حروفِ اصلیہ کی تعداد کے اعتبار سے فعل کی دو اقسام ہیں: 
    (۱)۔۔۔۔۔۔فعل ثلاثی۔ جیسے:نَصَرَ (۲)۔۔۔۔۔۔فعل رباعی ۔جیسے:زَلْزَلَ۔ 
٭ (۲)حروف علت کے اعتبار سے فعل کی چار اقسام ہیں: 
    (۱)۔۔۔۔۔۔ فعل صحیح ۔جیسے:نَصَرَ (۲)۔۔۔۔۔۔فعل مہموز ۔جیسے:اَکَلَ (۳)۔۔۔۔۔۔فعل مضاعف۔ جیسے :فَرَّ (۴)۔۔۔۔۔۔ فعل معتل ۔جیسے :قَالَ۔
٭(۳) زمانہ کے اعتبار سے فعل کی تین قسمیں ہیں :
(۱)فعل ماضی (۲)فعل مضارع (۳)فعل امر
(۱)۔۔۔۔۔۔فعل ماضی:
     وہ فعل جوگزشتہ زمانہ میں کسی کام کے ہونے پر دلالت کرے ۔ جیسے نَصَرَ (مدد کی اس ایک مرد نے )۔
(۲)۔۔۔۔۔۔فعل مضارع:
    وہ فعل جو زمانہ حال یااستقبال میں کسی کام کے ہونے پر دلالت کرے ۔ جیسےیَنْصُرُ(مدد کرتا ہے یا کریگا وہ ایک مرد )۔
(۳)۔۔۔۔۔۔فعل امر:
    وہ فعل جس کے ذریعہ مخاطَب سے کوئی کام طلب کیا جائے۔ جیسے أُنْصُرْ(مد د کر تو ایک مرد)۔
٭(۴)۔۔۔۔۔۔فاعل کی طرف نسبت کے اعتبار سے فعل کی دو قسمیں ہیں: 
(۱) فعل معروف (۲) فعل مجہول 
(۱)۔۔۔۔۔۔فعل معروف:
    وہ فعل جس کی نسبت فاعل کی طرف کی گئی ہو۔ جیسےنَصَرَ زَیْدٌ(زید نے مدد کی )
(۲)۔۔۔۔۔۔فعل مجہول:
    وہ فعل جس کی نسبت مفعول بہ کی طرف کی گئی ہو ۔جیسےنُصِرَ زَیْدٌ (زیدکی مددکی گئی )
٭ (۵)مفعو ل بہ کی ضرورت کے اعتبار سے فعل کی دو قسمیں ہیں: 
(۱) فعل لاز م (۲)فعل متعدی 
(۱)۔۔۔۔۔۔فعل لازم:
    وہ فعل جسے سمجھنے کے لیے فاعل کے علاوہ مفعو ل بہ کی ضرورت نہ ہو ۔ جیسے جَاءَ زَیْدٌ (زید آیا )۔
(۲)۔۔۔۔۔۔فعل متعدی:
    وہ فعل جس کا سمجھنا مفعول بہ پر موقوف ہو ۔ جیسے نَصَرَ زَیْدٌ خَالِداً(زید نے خالد کی مدد کی ) 
٭(۶)نفی واثبات کے اعتبار سے بھی فعل کی دو قسمیں ہیں: 
(۱) فعل مُثبت (۲) فعل منفی
(۱)۔۔۔۔۔۔فعل مُثبَت:
    وہ فعل جس میں کسی کام کا ہونا یاکرنا پایا جائے ۔ جیسے نَصَرَ زَیْدٌ  (زید نے مدد کی)
 (۲)۔۔۔۔۔۔فعل منفی:
    وہ فعل جس میں کسی کام کا نہ ہو نا یا نہ کرنا پایا جائے ۔جیسے : مَانَصَرَ زَیْدٌ  (زید نے مدد نہیں کی) 
                سوالات 
    سوال نمبر۱:۔حروف اصلیہ کی تعداد کے اعتبار سے فعل کی کتنی اور کون کونسی اقسام ہیں؟ مع تعریفات وامثلہ بیان فرمائیں۔
    سوال نمبر۲:۔حروف علت کے اعتبار سے فعل کی کتنی اور کون کونسی اقسام ہیں؟ مع تعریفات وامثلہ بیان کیجئے۔
    سوال نمبر۳:۔مع تعریفات وامثلہ بتائیں کہ زمانے کے اعتبار سے فعل کی کتنی اور کون کونسی اقسام ہیں؟ ۔
    سوال نمبر۴:۔فاعل کی طرف نسبت کے اعتبار سے فعل کی کتنی اور کون کونسی اقسام ہیں؟ مع تعریفات وامثلہ احاطۀ بیان میں لائیں۔
    سوال نمبر۵:۔مفعول بہ کی ضرورت کے اعتبار سے فعل کی اقسام کومع تعریفات وامثلہ رنگ بیان سے مزین فرمائیں۔
    سوال نمبر۶:۔نفی واثبات کے اعتبار سے فعل کی کتنی اور کون کونسی اقسام ہیں؟ مع تعریفات وامثلہ سپرد نوک زبان کیجئے۔
error: Content is protected !!